Processing Order Please Wait

Once the process is finished,
you will be automatically
redirected to the order confirmation page.

GET PKR 500 OFF + FREE SHIPPING on all orders of PKR 5000 and above

Use Promo Code: TREAT500

cart-icon

Roop Behroop

Roop Behroop

Roop Behroop

By: MUSTANSAR HUSSAIN TARAR


Publication Date:
Jan, 01 2021
Binding:
Hard Back
Availability :
In Stock
  • Rs 841.50

  • Rs 990.00
  • Ex Tax :Rs 841.50
  • Price in loyalty points :792

You saved Rs 148.50.

Due to constant currency fluctuation, prices are subject to change with or without notice.

Read More Details

اس ناولٹ میں مستنصر حسین تارڑ کا قلم کسی بگولے کی طرح ماضی، حال اور مستقبل میں سرگرداں ہے۔ روپ بہروپ میں ہماری ساری پرانی اورنئی تاریخ، باری باری کٹہرے میں کھڑی نظر آتی ہے۔ دریائے خون ہے جس میں ہم ڈو بتے اور ابھرتے ہیں اور نومیدی کے کسی ساحل پر جا نکلتے ہیں۔

 ہمارا ماضی، پیر تسمہ پا کی طرح، اپنی گرفت ڈھیلی نہیں کرتا ۔ ہماری ستر سالہ آزادی کی روداد، جو کہیں کا بوسہے کہیں فریاد، ہم اس سے، جسےیاد بھی نہیں رکھنا چاہتے  اور بھلا بھی نہیں سکتے، آباد بھی ہیں برباد بھی۔

،خوں چکاں اور ناانصافی پر بھی یہ ہماری کہانی ہے۔ کم زوروں کو ستانے ،قانون کو اپنے ہاتھ میں لینے کے  قصے دہشت گردی کے واقعات جو پشاور میں سکول کے بچوں اور استانیوں کے قتل عام پر ختم ہوتے ہیں ۔ ہم لوریاں  سنا کر اپنے ضمیر کو سلانا چاہتے  ہیںلیکن یہ لوریاں وقتاََفوقتاََ عفریتوں کے قہقہوں میں بدل جاتی ہیں۔ یہ فردِ جرم ہے جو مستنصر نے دکھی ہو کر لکھی ہے۔ یہ ناولت آئینہ ہے۔ اس میں گر اپنی صورت ٹیڑھی میڑھی نظر آتی ہے تو سوچنا چاہیے کہ ہمیں اپنا آپ بدلنے کی کتنی ضرورت ہے۔ آئینہ اٹھا کر پھینک دینے سے حقائق نہیں بدلا کرتے۔